بلوچستان میں گارے کا لاوا پھوٹ پڑا

mud volcano

نیا پھوٹنے والا گارے کا لاوا

پسنی ڈسٹرکٹ میں ساحل سمندر کے قریب ریت میں ایک گارے کا لاوا ابل پڑا ہے۔ یہ لاوا پسنی کے جنوب میں واقع زریں  چٹان کے قریب پھوٹا ہےاور لوگ اس کو دیکھنے بڑی تعداد میں جا رہے ہیں۔لاوا میں سے گارے کی مانند مواد ابل کر باہر آرہا ہے ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ تا حال  کسی مقامی جیولوجیکل یا ماحولیاتی ٹیم نے لاوا کا مشاہدہ نہیں کیا۔

نیچے دی گئی ویڈیو پاک وائسز کے نمائندے نے موقع پر لی ہے۔ اسے دیکھنے کے لئے اس پر کلک کریں:

دنیا میں بہت جگہ اس طرح کا لاوا دیکھنے کو ملتا ہے۔ عموما  یہ تب پیدا ہوتا ہے جب زیر زمین پریشر کسی وجہ سے کافی بڑھ جائے۔ ایسے میں پانی کا درجہ حرارت زیادہ ہو جاتا ہے اور وہ مختلف زمینی مرکبات کو اپنے اندر شامل کرتا ہواگارے کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ یہ گارا پھر زمین کی سطح کی طرف لپکتا ہے۔ ایسے لاوے میں نظر آنے والے بلبلے گیس کے خراج کی نشانی ہے  جو کہ اکثر میتھین گیس ہوتی ہے۔

اس لاوے کے حوالے سے جب پاک وائسز نے پاکستان جیولوجیکل سروے کے کوئٹہ آفس سے رابطہ کیا تو وہاں ڈائریکٹر پلاننگ نظرالاسلام صاحب نے بتایا کہ اس واقعے کا ان کو علم نہیں۔ ان کے مطابق "جب ایسا کوئی واقعہ ہوتا ہے تو مقامی انتظامیہ، عموما ڈی-سی آفس ہمیں اطلاع کرتا ہے اور اس جگہ مدعو کرتا ہے۔ اس کے بعد ہی ہماری ٹیم وہاں جاتی ہے۔"

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ  ویکیپیڈیا کے مطابق دنیا کا سب سے بڑا گارے کا لاوا  بھی بلوچستان میں ہے۔ اس کا نام بابا چندراگپ ہے اور یہ ہنگلاج کے راستے میں ہے جو کہ ہندووں کے لئے ایک مقدس مقام ہے۔ ہنگلاج جاتے ہوئے ہندو زائرین ایک دن کے لئے اس لاوے کے پاس رکتے ہیں اور عبادت کرتے ہیں۔