صحت

پسنی میں اومانی گرانٹ سے قائم شدہ ہسپتال (تصاویر)

ہسپتال کا بیرونی منظر

پسنی میں سرکاری اور پرائویٹ ہسپتالوں میں ڈاکٹر اور ادویات عدم دستیاب ہیں جس کی وجہ سے پسنی اور گرد و نواح کے مریضوں کو علاج کے لئے تربت، گوادر یا کراچی کا رخ کرنا پڑتا ہے۔ اب پسنی میں بالآخر اومانی گرانٹ سے ایک ہسپتال قائم کیا گیا ہے جس میں تیس بیڈز تک کی جگہ ہے اور جہاں علاج معالجے کے معقول انتظامات ہوں گے۔ اگرچہ ہسپتال کی عمارت مکمل ہو چکی ہے مگر یہ فی الحال فنکشنل نہیں ہوا ہے۔ مزید پڑھئے »

پسنی میں کوئی ڈاکٹر اور ادویات نہیں، عوام کی زندگیاں خطرے میں

تصاویر: پاک وائسز پسنی شہر کی آبادی تقریبا ایک لاکھ ہے اور اگر آس پاس کے علاقوں کو شامل کیا جائے تو یہ آبادی ڈیڑھ لاکھ تک جا پہنچتی ہے۔ مگر افسوسناک امر ہے کہ اتنی بڑی آبادی کو انتہائی ناقص اور نا مکمل صحت کی سہولیات دستیاب ہیں۔ پسنی کے مکینوں کا کہنا ہے کہ جب بھی انہیں کوئی طبی امداد یا علاج کی ضرورت ہوتی ہے انہیں تربت، گوادر یا کراچی کا رخ کرنا پڑتا ہے۔ ایک طرف پسنی شہر میں معیاری علاج و ادویات اور ڈاکٹر دستیاب نہیں تو دوسری طرف ایک عام شہری کو جب بنیادی علاج کے لئے ... مزید پڑھئے »